(پودوں کی غذا)


IMG-20210408-WA0006.jpg
Source

(پودوں کی غذا)

پودوں کی بھی جان ہوتی ہے، کھانے پر اس کی زندگی ہے اور اسکی خوراک کھاد یا زمین ہوتی ہے۔

یہ پودا اگر اکھیڑ کر الگ رکھ دیں تو پتیاں کسی مرجھا جاتی ہیں، پودا تو سکھ ساکھ کر بالکل مردہ سا ہو جاتا ہے۔

اگر جڑ کو ہی اکھیڑ دی جائے گی تو زمین سے کھاد لے کر پہنچتی تھی، اسی کے سہارے زندہ تھا، کھاد نہ ملنے سے وہ مر گیا۔

پودے کو پانی کی بھی بہت ضرورت ہوتی ہے، وہ اپنی غذا بغیر پانی کے زمین سے لے ہی نہیں سکتا۔

اگر مٹی کے دو برتنوں میں پودے لگائیں، ایک برتن میں تو پانی دیتے رہیں، اُسکا پودا ہرا بھرا رہے گا۔

دوسرے برتن میں پانی کا قطرہ بھی نہ ڈالیں تو اسکا پودا سوکھ کر مر جائےگا۔

جب بارش ہوتی ہے تو زمین پر قسم قسم کے پودے زمین پر پیدا ہو جاتے ہیں، اور جب تک زمین پر نمی باقی رہتی ہے وہ ہرے بھرے رہتے ہیں۔

گرمی کے موسم میں زمین سوکھ جاتی ہےتو پودے بھی خشک اور مردہ ہو جاتے ہیں، سوکھی زمین پر پودا نہیں جی سکتا، پانی ہی سے اس میں جان آتی ہے۔

جزاک اللّہ۔


Comments 0